25

مشکل وقت میں کیسے حوصلہ برقرار رکھا جائے؟

مشکل وقت میں کیسے حوصلہ برقرار رکھا جائے؟

انسان کو زندگی میں کبھی ایسے وقت کا سامنا بھی کرنا پڑسکتا ہے جب ہر خواب ٹوٹتا ہوا محسوس ہوتا ہے اور امید کی کرن نظر نہیں آتی ۔ ایسے میں منفی سوچیں اسے چاروں اطراف سے گھیرے میں لے لیتی ہیں۔ اکثر افراد ایسی صورتحال میں دل برداشتہ ہوکر خود کو حالات کے رحم و کرم پر چھوڑ دیتے ہیں جبکہ حوصلہ مند لوگ مشکل وقت گزار جاتے ہیں۔ اگرچہ آپ ہمیشہ حالات کو قابو میں نہیں رکھ سکتے لیکن اپنے رد عمل کے ذریعے نتائج کا رخ مثبت سمت کی جانب ضرور موڑ سکتے ہیں۔

معروف امریکی موٹیویشنل اسپیکر جان میکس ویل کا کہنا ہے ، ’’آپ چیلنجز کو چھوٹا کرکے نہیں بلکہ خود کو بڑا بنا کر کامیاب ہوتے ہیں‘‘۔

اگر آپ کسی بھی موڑ پر برے وقت کو اچھے وقت میں تبدیل کرنے کے خواہشمند ہیں تو ایسے میں آپ کو ضرورت ہے’’سیلف موٹیویشن‘‘ کی کیونکہ یہی وہ واحد راستہ ہے جو مشکل وقت کو گزارنے میں آپ کی مدد اور کامیابی سے ہمکنار کرسکتا ہے۔ 

دنیا کے ہر کامیاب شخص کے پیچھے کسی کی حوصلہ افزائی اور کچھ کر دکھانے کی ترغیب ہوتی ہے، جو ناممکن کو بھی ممکن بنادیتی ہے۔ لیکن سوال یہ ہے کہ آخر ایک ایسے وقت میں جب ہر چیز مخالف جاتی ہوئی محسوس ہو تو پھر کیسے حوصلہ برقرار رکھا جائے؟ اس حوالے سے ماہرین ذیل میں درج چند مفید مشورے دیتے ہیں ۔

مشکل وقت میں کیسے حوصلہ برقرار رکھا جائے؟

پُر امید رویہ اپنائیں

سیانے کہتے ہیں انسان جیسی توقع کرتا ہے اسے ویسا ہی ملتا ہے۔ اس لیے امید رکھیں کہ ہر آنے والا دن آپ کے لیے بہترین ہوگا۔ ہر صبح آئینے میں خود کو دیکھ کر بلند آواز میں کہیں کہ آج کے دن میں یقیناً میرے لیے کچھ اچھا موجود ہے۔

جو اختیار میں نہیں، اس کی فکر چھوڑدیں

کچھ چیزیں انسان کے اختیار میں ہوتی ہیں جبکہ کچھ نہیں ہوتیں۔ حاصل اور لاحاصل چیزوں کے درمیان فرق کرنا سیکھیں۔ جو چیزیں، روّیے یا حالات آپ کے کنٹرول میں نہیں ان کے لیے فکر مند ہونا چھوڑدیں۔ جذباتی طور پر خود کو اس قدر نہ الجھائیں کہ یہ الجھن آپ کی کارکردگی کو مفلوج کردے۔ 

حالات ہمیشہ اچھے یا آپ کے حق میں نہیں ہوسکتے لیکن مطمئن رہیں کہ جلد ہی آپ غیرموافق حالات پر قابو پالیں گے اور تیزی سے کامیابی کی جانب گامزن ہوں گے۔ یقین رکھیں کہ صرف آپ ہی اپنے عمل اور رد عمل دونوں کو قابو میں کرسکتے ہیں ۔

مثبت سنیں اور پڑھیں

مثبت اور متاثر کن معلومات سے بھر ا دماغ بھی انسان کا حوصلہ بڑھانے کا باعث بنتا ہے۔ خود کو بار بار یہ یاددہا نی کروائیں کہ آپ مشکل حالات پر قابو پاکر کامیابی سے ہمکنار ہوسکتے ہیں۔ کسی بک اسٹور یا لائبریری کا رخ کیجیےاور مطالعہ کے لیے کوئی ایسی کتاب تلاش کیجیے جو آپ کا حوصلہ بڑھانے کا سبب بنے۔ 

فکشن والی کتابیں مختلف شخصیات کو سمجھنے کے لیے زبردست اور زندگی کو ایک نئے زاویے سے دیکھنے کا موقع فراہم کرتی ہیں۔ لاکھوں مایوس لوگوں کی زندگیوں میں امید اور حوصلے کے چراغ روشن کرنےمیں حوصلہ افزا کتابوں کا کردار ثابت شدہ ہے۔

مثبت سوچ والے افراد کی صحبت

منفی سوچ رکھنے والے افراد کا ساتھ اور ان سے گفتگو آپ کو اپنے مقاصد سے پیچھے ہٹاسکتی ہے۔ اگر آپ کبھی خود کو کسی ایسی صورت حال میں پائیں جہاں منفی گفتگو ہورہی ہو تو کوشش کرکے گفتگو کا موضوع تبدیل کریں۔ مثبت لوگوںکی تلاش جاری رکھیں اور کسی بھی منفی گفتگو کا حصہ نہ بنیں۔ 

کامیاب اور مثبت سوچ کے حامل افراد کےساتھ وقت گزاریں، اگر آپ کو اچھی منزل یا برے دوستوں میں سے کسی ایک کا انتخاب کرنا پڑے تو اچھی منزل کو چنیں۔ اچھے لوگ منزل کے حصول میں مدد گار ثابت ہوں گے جبکہ برے دوست اس میں رکاوٹ بنیں گے۔

مثبت لفظوں کا استعمال

الفاظ جادوئی تاثیر رکھتے ہیں، آپ کے ارد گرد کیا ہورہا ہےاس سے قطع نظر ان حالات پربات کریں جو آپ کے موافق ہوں۔ دوسری جانب جو ہورہا ہے یا جس کی آپ خواہش رکھتے ہیں، اس سے متعلق لکھنا بھی شروع کریں اور جب کبھی فارغ وقت ملے تو اس تحریرکو نکال کر پڑھیں۔یہ عمل آپ کو برے حالات میں حوصلہ مند رکھنے میں مدد دے گا۔

غلطیوں سے سیکھیں

غلطیاں سب کرتے ہیں لیکن ان غلطیوں سے سیکھنا اور آگے بڑھنا اصل کامیابی ہے۔ ماضی میں ہر وہ غلطی جو آپ سے سرزد ہوئی ہے اس کاتجزیہ کریں اور جاننے کی کوشش کریں کہ کس طرح آپ ان حالات کو بہتر بناسکتے تھے۔ ممکنہ حل اور نتائج بھی تحریر کریں تاکہ خدانخواستہ مستقبل میں جب کبھی دوبارہ آپ کو کسی ایسی مشکل کا سامنا کرنا پڑے تو آپ ذہنی طور پر اس سے نمٹنے کے لیے تیار اور بہترین طریقوں سے آگاہ ہوں۔

منصوبہ بنائیں

ایک مشہور قول ہے ،’’اگر آپ منصوبہ بنانے میں ناکام ہیں توسمجھ لیں آپ ناکام ہونے کا ارادہ رکھتے ہیں‘‘۔ جب آپ کسی چیز کی منصوبہ بندی کرتے ہیں تو آپ شروع سے آخر تک خود کو تمام امور سے متعلق سوچنے کی اجازت دیتے ہیں۔ یہ عمل نت نئے آئیڈیاز کھوجنے اور پیداواری صلاحیت میں اضافہ کا سبب بن سکتا ہے۔ 

اپنے مستقبل سے متعلق تحریری منصوبہ بندی کریں اور آج سے ہی اس حوالے سے متحرک ہوجائیں۔ اگر آپ کی زندگی میں کوئی مقصد ہے تو پھر فوراً اسے تحریر کریں، اس سے متعلق منصوبہ بندی کرکے عمل کرنا شروع کر دیں۔ یہ چیز یقیناً آپ کا حوصلہ بڑھانے میں معاون ہوگی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں