145

فلسطین اور کشمیر میں جاری مظالم کو فلفور بند کیا جائے اسرائیل اور انڈیا فسلطین اور مقبوضہ کشمیر کو آزاد کریں پشتتون رہنماؤں عرب گل ملا گوری اور نوید خان کا تارا گونا میں ہونے والے فری کشمیر اور فلسطین سمینار سے خطاب

برسلز(مرزا عمران بیگ) نوید خان چیئر مین پشتون آرگنائزیشن یورپ اور عرب گل ملا گوری صدریورپ نے کہا ہے کہ فلسطین اور کشمیر میں انسانی حقوق کی بدترین پامالی پر انسانی حقوق کی تنظیمیوں اور عالمی اداروں کی خاموشی عالمی قوانین کے اطلاق میں دوہرے ے معیار کوظاہر کرتی ہے امن اور انصاف پسند حلقوں کو اس طرف توجہ دینے کی ضرورت ہے پشتون رہنما, ای یو پاک فرینڈشپ فیڈریشن یورپ کے سپین چیپٹر کے زیر اہتمام تارا گونا میں ہونیوالے انٹر نیشنل سمینار سے خطاب کر رہے تھے جس کا عنوان فری کشمیر اور فری فلسطین تھا اس سیمینار میں چیئر مین ای یو پاک فرینڈشپ فیڈریشن چوہدری پرویز اقبال لوسر نے خصوصی شرکت کی فلسطینی اور مراکشی کیمونٹی کی بھر پور شرکت نے سمینار کی اہمیت کو اجاگر کیا پشتون رہنماؤں نے اپنے خطاب میں کہا کہ رمضان ا لمباک کے مقدس مہینے میں اسرائیل نے مسلمانوں کے قبلہ اول مسجد اقصی میں نہتے عبادت میں مصروف مسلمانوں کو شہید اور سینکڑوں کو زخمی کردیا اور ظلم و جبر کا یہ سلسلہ گزشتہ ِکئی دن جاری رہا جس میں سینکڑوں فلسطینی جن میں ایک خاصی تعداد بچوں کی تھی شہید ہو گئے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل علاقے میں پائیدار امن اور فلسطینیوں کے حقوق دلوانے میں ناکام رہی ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ فلسطینیوں پر ظلم و بربریت کا سلسلہ بند کیا جائے اور اسرائیل خطے کو آزاد کرے کشمیر کے حوالے سے بات کرتے ہوئے پشتون رہنماؤں نے کہا کہ گزشتہ ستر سالوں سے کشمیری اپنی بقاء کی جنگ لڑ رہے ہیں آزادی کے حصول کے لئے انہوں نے اپنی ایک پوری نسل قربان کر دی ہے انڈیا نے ریاستی دہشت گردی کرتے ہوئے اپنی آٹھ لاکھ سے زائد مسلح افواج کے زور پر پوری ویلی کو یرغمال بنایا ہوا ہے اقوام متحدہ کی قراردادیں موجود ہیں جن کے مطابق مقبوضہ وادی کے رہنے والوں کو ان کی مرضی اور خواہشات کے مطابق رہنے کا حق دیا گیا ہے ہم آج کے سمینار کے پلیٹ فارم سے مطالبہ کرتے ہیں کہ فلسطین اور کشمیر کو فوری آزاد کیا جائے اور انڈیا اور اسرائیل ریاستی دہشت گردی بند کریں فلسطین میں ہونے والے مظالم کے خلاف اظہار یک جہتی کے لئے احتجاج پر حکومت فرانس نے پابندی لگا دی ہے ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ پر امن احتجاج کا حق ہر کیمیونٹی کو حاصل ہے اور فرانس میں رہنے والے مسلمانوں کو اپنے فلسطینی بھائیوں کے ساتھ اظہار یک جہتی کے طور پر پر امن احتجاج کی اجازت جائے آخر میں شرکاء نے فلسطین کے حق میں ایک قرارداد منظور کی جس میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ فلسطین میں پائیدار امن کے لئے اقوام متحدہ کے زیر نگرانی امن فوج تعینات کی جائے تاکہ اسرائیلی ریاستی دہشت گردی کی روک تھام ہو سکے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں